آرٹیکلز دلچسپ

ایک ہفتے میں کتنی بار بیوی کے’’ پاس‘‘ جانا چاہئے ؟ پاکستانی لوگ لازمی جان لیں

اللہ فرماتے ہیں نسائکم حرث لکم عورتیں تمہاری کھیتیاں ہیں کھیت میں جب مرضی آؤ جیسے مرضی آؤ،فاتو حرثکم تو آؤ تم اپنی کھیتیوں کے پاس جہاں سے تم چاہو یعنی اللہ نےاس میں قید نہیں لگائی ہے کہ کب آنا ہے اور کتنی بار آنا ہے ،شریعت میں اسکی کوئی قید نہیں ہے ،میاں بیوی اگر اپنے آپ کو سمجھتے ہیں

کہ روزانہ ملیں تو روزانہ مل لیں ہفتے بعدملنا چاہتے ہیں ہفتے بعد مل لیں ۔شریعت الٰہیہ نے اس حوالے سے کوئی قوانین وضع نہیں کیئے بس اصولی درجے کی گفتگو کی ہے کہ بیویاں تمہاری کھیتی ہیں جب چاہو آؤ اور جب چاہے جاؤ لیکن دوسری طرف عورتوں کے حقوق و فرائض کو بھی قرآن نے تفصیل سے سورہ النساء میں ذکر کیا ہے ۔بیوی کے حقوق پورے کئے جائیں اس کی صحت کا خیال رکھا جائے اگر عورت کی صحت اجازت دے تو دن میں دو مرتبہ کرنے سے بھی کوئی حرج نہیں اور اگر اجازت نہ دے تو ہفتے میں ایک بار بھی ہو سکتا ہے۔قیامت کے دن اس پر کوئی سوال نہیں ہو گا کہ ہمبستری کتنے بار اور کتنی مدت میں

کی،ق.یام.ت کے دن اصولی درجے کے سوال ہوں گے جن کا تعلق حقوق و فرائض سے ہوگا اوراسی بنا پر جزاء و سزا کا فیصلہ ہوگا۔شکریہ

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان کی شوبز انڈسٹری میں آئے روز نئے نئے انکشافات سامنے آتے رہتے ہیں اب ایک ایسا انکشاف سامنے آیا ہے جس میں اداکارہ نے پروڈیوسر کا نام بھی بتا دیا ہے معروف اداکارہ سحر شنواری نے الزام عائد کیا ہے کہ پروڈیوسر کی خواہشات مکمل نہ کرنے کی وجہ سے ان سے معاہدہ ختم کر دیا گیا ہے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے اداکارہ کا کہنا تھا

کہ پی ٹی وی میں کام کرنے والے رومی نام کے پروڈیوسر نے مجھے اپنے ساتھ سُلانے کی کوشش کی تھی، میرا معاہدہ صرف اس بنا پر منسوخ کیا گیا کیونکہ میں نے پروڈیوسر کے ساتھ سونے کی پیشکش کو ٹھکرا دیا تھا۔اداکارہ نے کہا کہ انہوں نے سوپ اوپیرا کے معاہدے پر دستخط کئے ہوئے تھے جو پیشکش قبول نہ کرنے کی بنا پر ختم کردیا گیا۔اداکارہ نے انکشاف کیا ہے کہ پہلے ان سے ٹیلنٹ کی بنیاد پر معاہدہ کر لیا گیا تھا، لیکن بعد میں اگلے ہی دن اس معاہدے کو اس لئے ختم کر دیا گیا کیونکہ انہوں نے پروڈویوسر کے ساتھ سونے کی پیشکش کو ماننےسے انکار کر دیا تھا۔اداکارہ کا اپنے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ پر مزید لکھنا تھا

کہ ” میں جانتی ہوں کہ مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلز پارٹی کے دور میں صلاحیتوں کے حامل افراد کو کس طرح سے فروغ دیا گیا، اب کم از کم وہ حلال ذرائع سے کما رہے ہیں۔ دوسری جانب ملک بھر میں چوبیس گھنٹوں کے دور ان مزید 33افراد کورنا وائرس کے باعث انتقال کر گئے جس کے بعد جاں بحق مریضوں کی تعداد 770ہوگئی ٗ1452نئے کیسز سامنے آگئے اور کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 35 ہزار 788 تک جا پہنچی،9665مریض صحتیاب ہوگئے ۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر نے تازہ اعداد و شمار جاری کر دئیے جس کے مطابق ملک بھر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 35 ہزار 788 تک

اپنا کمنٹ کریں